click on book to show pdf

نورایمان

انسان جس  کسی مذہب پر عمل پیرا ہے اسی کو حق سمجھ رہا ہے ۔اوراپنے علاوہ دوسروں کو اگر باطل پر نہ بھی سمجھے تو کم از کم ان کے بارے وہ نظریات نہیں رکھتا جواپنے مذہب کے بارے میں رکھتا ہے ۔ اسی لئے وہ ہر ممکن کو شش کرتا ہے کہ اپنے آپ […]

  • مولوی سید خیرات احمد صاحب
  • مجلس علمی اسلامی پاکستان
نورایمان
Rate this post
نورایمان
اس کتاب کے بارے میں
  • جائزہ

    انسان جس  کسی مذہب پر عمل پیرا ہے اسی کو حق سمجھ رہا ہے ۔اوراپنے علاوہ دوسروں کو اگر باطل پر نہ بھی سمجھے تو کم از کم ان کے بارے وہ نظریات نہیں رکھتا جواپنے مذہب کے بارے میں رکھتا ہے ۔ اسی لئے وہ ہر ممکن کو شش کرتا ہے کہ اپنے آپ کو حق ثابت کر سکے ۔اس لئے بحث و مباحثہ ہوتا ہے تحقیق کی جاتی ہے ۔ تاکہ کسی حتمی نتیجے پر پہنچا جا سکے اور یی بات ٹھیک بھی ہے جو شخص جس کسی مذہب پر ہے اس پر اس کے پاس دلیل بھی ہونی چاہیےاوردوسروں کےناحق ہونے پر بھی دلیل ہونی چاہیے یعنی میں اس مذہب کو اس لے مانتا ہوں اور فلاں مذہب کو اس دلیل کی بناپر نہیں مانتا ہوں ۔پیش نظرکتاب بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے جس میں ناول کے سے انداز میں شیعہ  و سنی اختلافی مسائل کا نہایت ہی عمدہ اور مودبانہ انداز میں  پیش کیا گیا ہے

  • تفصیلات
    • مولوی سید خیرات احمد صاحب
    • مجلس علمی اسلامی پاکستان
  • جائزے