click on book to show pdf

تدوین سیر و مغازی

نبی کریم ﷺ کی حیات طیبہ کا ایک ایک پہلو ہمارے لئے اسوہ حسنہ اور بہترین نمونہ ہے۔آپ ﷺ کی زندگی کا اہم ترین حصہ دشمنان اسلام ،کفار،یہودونصاری اور منافقین سے معرکہ آرائی میں گزرا۔جس میں آپ ﷺ کو ابتداءً  دفاعی اور مشروط قتال کی اجازت ملی اور پھر اقدامی جہاد کی بھی اجازت  بلکہ […]

  • مولانا قاضی اطہر مبارکپور
  • دارالنوادر لاہور
  • ۲۰۰۵
تدوین سیر و مغازی
Rate this post
تدوین سیر و مغازی
اس کتاب کے بارے میں
  • جائزہ

    نبی کریم ﷺ کی حیات طیبہ کا ایک ایک پہلو ہمارے لئے اسوہ حسنہ اور بہترین نمونہ ہے۔آپ ﷺ کی زندگی کا اہم ترین حصہ دشمنان اسلام ،کفار،یہودونصاری اور منافقین سے معرکہ آرائی میں گزرا۔جس میں آپ ﷺ کو ابتداءً  دفاعی اور مشروط قتال کی اجازت ملی اور پھر اقدامی جہاد کی بھی اجازت  بلکہ حکم فرما دیا گیا۔نبی کریم ﷺکی یہ جنگی مہمات  تاریخ اسلام کا ایک روشن اور زریں باب ہیں۔جس نے امت کو یہ بتلایا کہ  دین کی دعوت میں ایک مرحلہ وہ بھی آتا ہے  جب داعی دین کو اپنے ہاتھوں میں اسلحہ تھامنا پڑتا ہے اور دین کی دعوت میں رکاوٹ کھڑی کرنے والے عناصر اور طاغوتی طاقتوں کو بزور طاقت روکنا پڑتا ہے۔نبی کریم ﷺ نے اپنی حیات طیبہ میں ستائیس غزوات میں بنفس نفیس شرکت فرمائی اور تقریبا سینتالیس مرتبہ صحابہ کرام  کو فوجی مہمات پر روانہ فرمایا۔موضوع کی اہمیت کے پیش نظر متعدد اہل علم نے اس پر اپنا قلم اٹھایا اور آپ ﷺ کی کے مغازی اور سیرت کو سپرد قلم وقرطاس کردیا۔زیر تبصرہ کتاب" تدوین سیر ومغازی"ہندوستان کے معروف عالم دین مولانا قاضی اطہر  مبارکپوری کی تصنیف ہے۔جس میں انہوں نے  پہلی صدی کے آخری نصف سے لیکر تیسری صدی تک کے علماء سیر و مغازی  اور ان کی تصنیفات  کی تفصیل بیان کر کے  علم حدیث کی اس خاص  اور اہم نوع  کے بارے میں  ان کی تصنیفی،تعلیمی اور  روایاتی خدمات کا جائزہ لیا ہے

  • تفصیلات
    • مولانا قاضی اطہر مبارکپور
    • دارالنوادر لاہور
    • ۲۰۰۵
    • طبع اول
    • قدوسیہ اسلامک پریس لاہور
  • جائزے